8 - حضرت عیسی علیہ السلام مر نے كے باد دوبارہ زنده ھوئے.

Views : 376

Description

حضرت عیسی علیہ السلام کی تصلیب سے کہانی کا اختتام نہیں ہوا. دراصل، کئی طریقے سے، یہ صرف ایک آغاز ہے. جب حضرت عیسی علیہ السلام اپنے شاگردوں کے ساتھ کمرے میں داخل ھوۓ ، انہوں نے اپنے خوف پر کابو پایا ، امن کی خواہش ظاہر کی، اور پھر ان کو ظاہر کرنا شروع کر دیا کے وہ کس طرح خدا کے پرانے عہد نامہ میں موجود وعدہ کی تکمیل ہیں. (دیکھیں لیوک 24:44). یسوع نے واضح طور پر خود کو متعارف کرایا کے وہ خدا کے پرانے عہد نامہمیں موجود وعدوں کی تکمیل ہیں . رسول پال نے بعد میں اس خوشخبری کا خلاصہ ا س تررہا سے بیان کیا تھا کہ " صحابہ کے مطابق حضرت عیسی علیہ السلام نے ہمارے گناہوں کے لئے اپنی جان دی اور انکو دفن کیا گیا تھا اور صحیفوں کے مطابق تیسرے دن حضرت عیسی علیہ السلام دوبارہ اوپر اٹھ گہے." (ا کور 14: 4). اگر حضرت عیسی علیہ السلام مرنے کے بعد دوبارہ زندہ نہیں ہوے تو ، عیسائیوں کا عقیدہ بیکار ہے. کوئی خوشخبری نہیں تھی، جب تک کہ جو انسان کی انسانیت کے گناہوں کے لئے مر گیا، وہ دوبارہ زندہ نہیں ہو تا. سب شک جو حضرت عیسی علیہ السلام کی موت سے شاگردوں پر گر پڑے وہ ایک لمحے میں مٹ گئے جب فرشتہ نے قبرستان میں عورتوں سے کہا، "تم مردوں کے درمیان زندہ کیوں ڈھونڈتے ہو؟ وہ یہاں نہیں ہے، لیکن دوبارہ زندہ ہو گیا ہے " (لوق 24: 5-6). کیا آپ حضرت عیسی علیہ السلام کی موت میں اپنے لئے نجات پر یکین کرتے ہیں، جس میں گناہ اور اس کے نتائج سے نجات حاصل ہوتی ہے ؟ کیا آپ کو یقین ہے کہ حضرت عیسی علیہ السلام وہی ہے جو وہ کہتا ہے؟